پاکستان، ترکی اور ملائشیا کا اسلامی ٹی وی چینل شروع کرنے کا فیصلہ

ویب ڈیسک ۔ اقوام متحدہ کے جنرل اسمبلی کے اجلاس کے دوران پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کافی متحرک نظر آئے۔ وہ ہر فورم پر اسلام، پاکستان اور کشمیر کا مقدمہ بھرپور طریقے سے لڑتے ہوئے نظر آئے۔

گزشتہ شب ترک صدر طیب اردگان اور ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد سے ملاقات کے بعد عمران خان نے ٹویٹر پر اعلان کیا کہ پاکستان، ترکی اور ملائیشیا تینوں ممالک ملک کر ایک ایسا اسلامی ٹی وی چینل شروع کرنے والے ہیں جو پوری دنیا میں اسلام و فوبیا سے لڑنے میں مدد گار ہو گا۔ انگریزی زبان کا یہ چینل نہ صرف مسلمانوں کو اسلام کی تعلیم دے گا بلکہ غیر مسلموں کو اسلام کےبارے میں حقائق سے آگاہ کرے گا۔

اپنے ٹویٹس میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ صدر اردگان، وزیراعظم مہاتیر محمد اور میں نے آج ملاقات کی اور فیصلہ کیا کہ ہم تینوں ممالک ملکر ایک ایسا انگریزی چینل شروع کریں گے جو “اسلاموفوبیا” سے جنم لینے والے چیلنجز کے مقابلے اور ہمارے عظیم مذہب “اسلام” کے حقیقی تشخص کو اجاگر کرنے کیلئے مختص ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایسی تمام غلط فہمیوں،جو لوگوں کو مسلمانوں کیخلاف یکجا کرتی ہیں،کا ازالہ کیا جائےگا؛ توہین رسالت کے معاملے کا سیاق و سباق درست کیاجائے گا؛اپنے لوگوں کیساتھ دنیا کی تاریخ اسلام سے آگہی/واقفیت کیلئے سیریز/فلمیں تیار کی جائیں گی اور میڈیا میں مسلمانوں کے وقف حصے کا اہتمام کیا جائے گا