مخدوم علی خان اور نعیم بخاری کا اٹارنی جنرل بننے سے انکار،خالد جاوید خان کا نام سامنے آگیا

اسلام آباد( ویب ڈیسک ) پاکستان کے نئے اٹارنی جنرل کے لیے خالد جاوید خان کا نام سامنے آگیا۔تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے 2018 میں بھی اٹارنی جنرل آف پاکستان کے عہدے پر تعینات رہ چکے خالد جاوید خان کو ازسر نو ذمہ داریاں سونپنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔واضح رہے کہ حکومت نے اٹارنی جنرل آف پاکستان انور منصور خان سے استعفیٰ لے لیا ہے جس کے بعد وہ اپنے عہدے سے دستبردار ہو گئے ہیں۔ جس کے بعد وفاقی حکومت نےنئے اٹارنی جنرل کے لیے مختلف ناموں پر غور کرتے ہوئے سینئر قانون دان مخدوم علی خان کو منصب آفر کیا لیکن انہوںنے اٹارنی جنرل بننے کی اس حکومتی پیشکش کومسترد کر دیا ۔ سینئر قانون دان نعیم بخاری نے بھی یہ منصب قبول کرنے سے معذرت کر لی جبکہ بیرسٹر علی ظفر نے مہلت مانگ لی۔ ایڈوکیٹ جنرل پنجاب احمد جمال سکھیرا کے نام پر بھی غور کیا گیااور اب خالد جاوید خان کا نام نئے اٹارنی جنرل کے طور پر لیا جا رہا ہے۔
واضح رہے کہ آج سہ پہر پاکستان کےاٹارنی جنرل انور منصور خان نے اپنا استعفیٰ منظوری کے لیے صدر مملکت کو بھجوا دیا ہے جس میں درخواست کی گئی ہے کہ استعفیٰ فوری طور پر منظور کیا جائے۔