نوسٹراڈیمس کی 465 سال قبل کرونا وائرس سمیت سال 2020 سے متعلق اہم پیش گوئیاں

لاہور( ویب ڈیسک) کرونا وائرس ان دنوں پوری دنیا میں سب سے زیادہ توجہ کا حامل موضوع بنا ہوا ہے۔اسی وقت ، کچھ بلاگرز نے سوشل میڈیا پر کرونا وائرس کو نوسٹراڈیمس کی پیش گوئی سے جوڑاہے۔مائکروبلاگنگ ویب سائٹ کے ذریعے ، ان بلاگرز نے دعوی کیا ہے کہ فرانسیسی نژاد پیشن گو نوسٹراڈیمس نے لگ بھگ 465 سال قبل کرونا وائرس کی پیش گوئی کی تھی۔ ایک اور صارف نے ہسپانوی زبان میں ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا “اکیسویں صدی میں وبا پھیل چکی ہے۔ یہ خود نوسٹراڈیمس کی پیش گوئی تھی۔ ہم موت کے بہت قریب ہیں۔”
ایسا مانا جاتا ہے کہ نوسٹرا ڈیمس نے15 ویں صدی میں اپنی ایک پیش گوئی میں ایک خوفناک وبا کی پیش گوئی کی تھی۔واضح رہے کہ
نسٹریڈمس کی پیش گوئیاں پراسرار جملوں میں پائی جاتی ہیں جن کو Quatrain(رباعی) کہا جاتا ہے۔ اس کی پیشگوئیوں سب سے پہلے 1555 میں منظر عام پر آئیں
آن لائن نظریہ سازوں کا دعویٰ ہے کہ کرونا وائرس کا تذکرہ نوسٹراڈیمس کی جس رباعی میں ملتا ہے اس میں سمندر سے ملحقہ شہر میں ایک بڑی وبائی بیماری پھیلنے کا کہا گیا ہے کہ یہ وبائی بیماری لوگوں کو موت تک لائے بغیر نہیں رکے گی۔تھیورسٹس ووہان شہر کا حوالہ دے رہے ہیں جیسا کہ شہر نوسٹراڈیمس کی پیش گوئی میں ذکر کیا گیا ہے، اس شہر میں سمندری مخلوق کے کاروبار کا بازار بھی ہے۔
ان پیشنگوئیوں پر یقین رکھنے والے کہتے ہیں کہ نوسٹراڈیمس وہی شخص ہے جس نے 1666 میں لندن کی عظیم آگ اور 1933 میں ہٹلر کے عروج جیسی پیش گوئیاں کیں تھیں۔نوسٹراڈیمس نے اپنی کتاب دی پروفیسیز سال 2020 میں ، تقریباً 500 سال قبل ایسی پیش گوئی کی تھی ، کہ یہ رونے والا سال ہے۔ نوسٹراڈیمس نے 2020 کو تباہی کا سال قرار دیا ہے۔نوسٹراڈیمس کی پیش گوئی کے مطابق ، دنیا کے بڑے شہروں میں خانہ جنگی جیسے حالات پیدا ہوں گے۔ اس کے علاوہ ، سال 2020 میں ، بہت سے ممالک کے مابین تنازعات بڑھ جائیں گے۔ اسے تیسری عالمی جنگ کا خوف تھا۔ تو ، کیا اس سال کی شروعات میں امریکہ اور ایران کے مابین شروع ہونے والی جنگ کی پیش گوئی پر مہر لگ جاتی ہے؟
نوسٹراڈیمس کے مطابق اس سال موسمیاتی تبدیلی پوری دنیا کو متاثر کرے گی۔ قدرتی آفات نے آسٹریلیا ، فرانس اور جنوبی امریکہ سمیت کئی علاقوں میں تباہی مچا دی ہے۔ اس سے پہلے آسٹریلیا اور ایمیزون کے جنگلات میں لگی آگ کو بھی اس میں شامل کرکے دیکھا جاسکتا ہے۔
نوسٹراڈمس کی حقیقی پیش گوئیاں
فرانسیسی انقلاب اور نپولین بوناپارٹ کی پیدائش سے لگ بھگ 200 سال قبل ، نوسٹریڈمس نے دنیا کو اس کے بارے میں بتایا تھا۔ نوسٹراڈیمس نے دوسری جنگ عظیم کے بارے میں بھی متنبہ کیا ، جو دنیا میں سب سے بڑی تباہی لائی۔اس نے 500 سال پہلے بتایا تھا کہ اس دنیا کے لوگوں کو دو عالمی جنگوں کا سامنا کرنا پڑے گا ، جس میں ہزاروں اور لاکھوں افراد کا خاتمہ ہوگا۔ یہ جنگ 1939 سے 1945 کے درمیان لڑی گئی اور لاکھوں فوجی اور عام لوگ اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔دنیا نے پہلی بار ایٹم بم کی تباہی دیکھی۔ جب
جنگ ختم ہوئی تو ، شامل ممالک کی معیشت ، صنعت اور فوجی قوتیں تباہ ہوگئیں۔برطانیہ کی شہزادی ڈیانا نوسٹراڈمس کی کتاب دی پروفیسیز میں امریکی صدر جان ایف کینڈی کے قتل اور برطانوی شہزادی لیڈی ڈیانا کی موت کا بھی ذکر ہے..نوسٹراڈیمس نے اپنے محافظوں کے ہاتھوں ہندوستان کی سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کے قتل کے اشارے بھی دیئے تھے۔امریکہ پر نائن الیون حملے سے لے کر ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی تک نوسٹراڈیمس کی بہت ساری پیش گوئیاں سو فیصد درست ثابت ہوئی ہیں۔