ٹویٹر کا نیا فیچر لانچ کرنے کا اعلان

لاہور( ویب ڈیسک )ٹویٹر نے ایک نیا فیچر لانچ کرنے کا اعلان کیا ہے ، جس میں 24 گھنٹے کے بعد کچھ ٹویٹس نظر نہیں آئیں گی۔ یعنی ، وہ خودبخود ختم ہوجائیں گی۔ ٹویٹر نے اس نئی خصوصیت کا نام “فلیٹ”fleets رکھا ہے۔ جس طرح سنیپ چیٹ اور انسٹاگرام اسٹور کی پوسٹیں کچھ عرصے کے بعد خود بخود غائب ہوجاتی ہیں ، اسی طرح ٹویٹرمیں بھی یہ نئی خصوصیت متعارف کرائی جا رہی ہے لیکن فی الحال اس کا تجربہ صرف لاطینی امریکی ملک برازیل میں کیا جارہا ہے۔ لیکن اس اعلان کے ساتھ ہی ، #RIPTwitter ٹرینڈکر رہا ہے، صارفین نے شکایت کے لہجے میں کہا کہ ایسا ہونے کی صورت میں ، یہ مائیکرو بلاگنگ سائٹ بھی دوسرے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کی طرح ہوجائے گی۔ یعنی یہ اپنی امتیازی حیثیت کھو دے گی۔
ان صارفین کا کہنا ہے کہ اگر ٹویٹر واقعتا ًکچھ نیا کرنے جارہا ہے تو پھر اس میں فلیٹ کی بجائے ترمیم کا آپشن دیا جانا چاہئے تاکہ اگر کوئی بھی اپنے ٹویٹ میں کچھ تبدیل کرنا چاہتا ہے تو وہ کرسکتا ہے۔ صارفین کہتے ہیں کہ صرف ایک ترمیم کا آپشن شامل کیا جانا چاہئے جبکہ اس کے بجائے ٹیک فرم یہ کہہ رہی ہے کہ 24 گھنٹے کے بعد پورا ٹویٹ غائب ہوجائے گا۔
تاہم ، جب کمپنی نے تجربہ کی سطح پر اس نئی خصوصیت کا اعلان کیا تو ، کمپنی کے پروڈکٹ لیڈ کیون بیککور نے کہا کہ اس طرح کی خصوصیت سے صارفین کو ان خیالات کا تبادلہ کرنے کی بھی سہولت ملے گی جس میں وہ اشتراک کرتے وقت تکلیف محسوس کرتے ہیں۔ چلیں۔ جب کسی صارف کی پروفائل تصویر پر کلک کیا جاتا ہے تو ، اس طرح کے فلیٹ پیغامات ظاہر ہوں گے ، لیکن کوئی بھی اس پر جواب دینے ، پسند کرنے یا عوامی سطح پر تبصرے کرنے کے قابل نہیں ہوگا۔ تاہم ، کمپنی نے ابھی تک یہ نہیں کہا ہے کہ عالمی سطح پر اس فیچر کو کب نافذ کیا جائے گا؟