کراچی کے 4 ڈاکٹرز بھی کرونا کا شکار، ملک میں مریضوں کی تعداد1420 ہو گئی

ویب ڈیسک ۔ عام عوام کے بعد اب کرونا وائرس نے طبیبوں کو بھی نشانہ بنانا شروع کر دیا ہے۔ اسلام آباد کے بعد کراچی کے 4 ڈاکٹروں میں کرونا وائرس کی علامات ظاہر ہونے پر انہیں قرنطینہ منتقل کر دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے  آغا خان ہسپتال اور لیاقت نیشنل ہسپتال کے چار ڈاکٹرز میں وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ہسپتال حکام نے ڈاکٹروں میں کرونا وائرس کی تصدیق کر دی ہے۔ وائرس کی تصدیق ہوتے ہی اسپتال انتظامیہ متحرک ہوگئی ہے۔

آغا خان ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے تقریبا ڈیڑھ سو افراد کو قرنطینہ میں ڈال دیا گیا ہے اور عملے کی فرداً فرداً سکریننگ کی جا رہی ہے۔ انتظامیہ کے اہم عہدیدار نے بتایا کہ تینوں افراد میں وائرس مثاثرہ مریض سے منتقل ہوا ہے۔

دوسری طرف لیاقت نیشنل ہسپتال نتظامیہ کے مطابق ریڈیولوجی ڈپارٹمنٹ کے ایک ڈاکٹر وائرس کا شکار ہوئے ہیں جس کے بعد ڈاکٹر نے خود کو گھر میں قرنطینہ کرلیا ہے۔ متاثرہ ڈاکٹر تبلیغی اجتماع میں گئے جب اسپتال واپس آئے تو پہلے ہی دن گلے میں تکلیف اور دیگر علامات ظاہر ہونے لگی۔لیاقت نیشنل ہسپتال کے ریڈیولوجی ڈپارٹمنٹ کے سات افراد کو قرنطینہ کردیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے اور اب تک مریضوں کی تعداد 1420 ہو چکی ہے۔ پنجاب نے سندھ کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور پنجاب میں مریضوں کی تعداد 490 تک پہنچ گئی ہے۔ جبکہ ملک میں کرونا سے جاں بحق افراد کی تعداد بھی 12ہو گئی ہے۔