ویب ڈیسک۔ کرونا وائرس پوری دنیا میں اپنی تباہ کاریاں جاری رکھے ہوئے ہے۔ کرونا وائرس سے متعلق مختلف آراٴ سامنے آرہی ہیں ایران اور چین کی جانب سے امریکہ پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ کرونا وائرس سپر پاور نے تیار کیا اور اپنے دشمنوں پر ’’بائیولوجیکل’’ حملہ کیا۔

تاہم اب اقوام متحدہ میں پاکستان کے سابق مستقل مندوب عبد اللہ حسین ہارون نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے حوالے سے اپنے ویڈیو پیغام میں دعویٰ کیا ہے کہ کرونا وائرس کو برطانیہ کی خفیہ لیبارٹری میں تیار کیا گیا اوراس کی رجسٹری امریکہ میں ہوئی۔

عبداللہ حسین نے دعویٰ کیا کہ  کرونا وائرس قدرتی طور پر پیدا نہیں ہوا بلکہ اسے لیبارٹری میں بنایا گیا ہے جبکہ  یہ کیمیکل ہتھیار تیار کرنے کے طور پر بہت بڑی سازش کی تیاری کی جا رہی تھی۔انہوں نے کہا کہ  کہ کرونا وائرس کو سینٹر آف کنٹرول ڈیزیز کی اجازت سے برطانیہ کی لیبارٹری میں تیار کیا گیا جس کی رجسٹری امریکہ میں ہوئی تھی۔

اقوام متحدہ میں سابق مندوب نے مزید کہا کہ امریکہ، چین کی ترقی سے پچھلے کچھ عرصے سے گھبراہٹ کا شکار تھا جس کی وجہ سے امریکہ نے وائرس کو ائیر کینیڈا کے ذریعے چین کے شہر ووہان کی لیبارٹری میں بھیجا جہاں سے یہ پوری دنیا میں پھیلا۔