مسلمانوں پر تشدد، ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھارت کا چہرہ بے نقاب کر دیا

نئی دہلی(ویب ڈیسک) بھارت میں مسلمانوں کے خلاف تشدد کی حالیہ لہر دیکھتے ہوئے ایمنسٹی انٹرنیشنل نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا ذمہ دار مسلمانوں کو ٹھہرانے کا رویہ اور طریقہ کار درست نہیں ہے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل نے واضح کیا ہے کہ عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس سے نمٹنے اور بچنے کے لیے سب کو متحد ہونا پڑے گا۔

کرونا کے بارے میں وارننگ دیتے ہوئے ایمنسٹی انٹرنیشنل نے خبردارکیا ہے کہ گمراہ کن پروپیگنڈے اور نفرت سے کورونا نامی وبا بڑھ رہی ہے۔

کرونا کی آڑ میں بھارت کی حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کے شدت اورانتہا پسند اس وقت پورے بھارت میں یہ منفی پروپیگنڈا کررہے ہیں کہ ملک میں کورونا پھیلنے کا سبب مسلمان ہیں جس کی وجہ سے مختلف شہروں اور علاقوں میں مسلمانوں کا بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور ان پر عرصہ حیات تنگ کردیا گیا ہے۔

یاد رہے امریکہ نے بھی بھارت کو پہلی مرتبہ 2004 کے بعد اقلیتوں کے لیے خطرناک ملک قرار دے دیا ھے جس میں 2019 میں بھارت تیزی سے نیچے آیا ہے۔