ایرانی بحریہ نے اپنے ہی جہاز پر میزائل داغ دیا،19 اہلکار ہلاک

تہران(ویب ڈیسک) ایران کی بحریہ نے مشقوں کے دوان اپنے ہی بحری جہاز پر میزائل داغ دیا جس کے نتیجے میں جہاز میں سوار نیوی کے 19 اہلکار ہلاک ہوگئے۔

عرب خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی فوج نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ واقعہ اتوار کے روز اس وقت پیش آیا جب فوجی مشقوں کے دوران خلیج اومان میں میزائل کو ہدف کی طرف فائر کیا گیا لیکن وہ قریب ہی موجود ایران کی سپورٹ شپ کو جالگا جس کے نتیجے میں جہاز میں سوار 19 افراد ہلاک اور 15 زخمی ہوگئے۔

عرب میڈیا کا بتانا ہےکہ واقعہ خلیج اومان پر تہران کے جنوب مشرق میں واقع جسک پورٹ کے قریب پیش آیا جہاں اتوار کے روز جسک اور چاہ بہار کے پانی میں نیوی کی مشقیں جاری تھیں اور اس دوان ایک سپورٹ شپ میزائل کا نشانہ بن گئی۔

ایران کے سرکاری میڈیا نے واقعے کو حادثہ قرار دیتے ہوئے کہا ہےکہ جہاز اپنے ہدف کو نشانہ بنارہا تھا کہ شپ ہدف کے انتہائی قریب تھی جس سے واقعہ پیش آیا، حادثے کا شکار بننے والی شپ کو 2018 میں تیار کیا گیا تھا جو سمندر سے میزائل فائر کرنے کی صلاحیت رکھتی تھی۔

عرب میڈیا کے مطابق اب تک اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی ہےکہ حادثے کے وقت جہاز میں کتنے ممبران سوار تھے تاہم ترک ایجنسی نے دعویٰ کیا ہےکہ جہاز میں 40 سے زائد ممبران موجود تھے جن میں سے 20 ہلاک ہوئے۔

ترک خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہےکہ ایرانی پاسداران انقلاب نے واقعے کو انسانی غلطی قرار دیا ہے۔