نسل پرستی کیخلاف مظاہرے میں کینڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کی شرکت

کینیڈا میں نسلی امتیاز کے خلاف نکالی جانے والی ریلی میں کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے بھی شرکت کی اور زمین پر گھٹنے ٹیک کر شرکا کو خراج تحسین پیش کیا.

یاد رہے کہ یہ ریلی امریکی شہر مینپولس میں سیاہ فام امریکی شہری جارج فلائیڈ کی موت کے تناظر میں نکالی گئی تھی جس میں کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈ نے سفید شرٹ زیب تن کر کے کالے رنگ کے حفاظتی ماسک کے ساتھ شرکت کی.

ریلی کے بعد جب شرکا امریکی سفارت خانے کی جانب احتجاج کرتے ہوئے بڑھے تو جسٹن ٹروڈو ان سے علیحدہ ہو کر واپس لوٹ گئے.

نسل پرستی کی بات کی جائے تو کینیڈا کے مشرقی علاقے میں بھی پولیس نے ایک خاتون کو گولی مار کر قتل کر دیا تھا اور یہ مظاہرے ایسی صورتحال میں کیے گئے ہیں.

اس احتجاج کے دوران جسٹن ٹروڈو 8 منٹ اور 46 سینکڈ تک گھٹنا ٹیک کر بیٹھے رہے وہ اس لیے کیونکہ جارج فلائیڈ کی موت بھی 8 منٹ اور 46 سیکنڈ کھٹنے کے نیچے دبنے سے واقع ہوئی تھی. اس موقع پر کینیڈین وزیراعظم میڈیا سے بات کیے بغیر ہی واپس روانہ ہو گئے.