کورونا،لاہور کے مزید 8 بڑے علاقوں کو آج مکمل بند کرنے کا امکان

لاہور(ویب ڈیسک) پنجاب میں کورونا کا پھیلاؤ روکنے کے لئے سمارٹ لاک ڈاؤن مزید سخت ہوگا، لاہور کے مزید 8 بڑے علاقوں کو آج مکمل بند کرنے کا امکان ہے، کابینہ کمیٹی کی منظوری کے بعد مزید علاقوں کو بند کیا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق چیف سیکرٹری محکمہ صحت کی رپورٹ کابینہ کمیٹی میں پیش کریں گے۔ مزید علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن کابینہ کمیٹی کی منظوری سے مشروط ہے۔ گلبرگ، ماڈل ٹاؤن، ڈی ایچ اے، گلشن راوی کو بند کرنے پر اتفاق، فیصل ٹاؤن، گارڈن ٹاؤن، اندرون شہر والڈ سٹی کو مکمل بند کیا جائے گا۔

ان علاقوں سے 3 ہزار 613 مریض رپورٹ ہوئے۔ متاثرہ علاقوں میں 96 ہزار 229 گھر اور 2 لاکھ 33 ہزار خاندان رہائش پذیر ہیں۔ ڈی ایچ اے میں 1403 مریض سامنے آئے جہاں 22 ہزار 405 گھر اور 44 ہزار 810 فیملیز رہائش پذیر ہیں۔

گلبرگ کے تمام بلاکس سے 736 کنفرم کورونا کیسز رپورٹ ہوئے جہاں 19 ہزار 363 گھر، 46 ہزار 471 خاندان رہائش پذیر ہیں۔ گلبرگ کی آبادی 2 لاکھ 50 ہزار 943 افراد پر مشتمل ہے۔

ماڈل ٹاؤن میں 659 کنفرم کورونا کیسز سامنے آئے جہاں 6 ہزار 876 گھر، 15 ہزار 127 خاندان رہائش پذیر ہیں۔ ماڈل ٹاؤن کی آبادی 93 ہزار 778 افراد پر مشتمل ہے۔

اسی طرح فیصل ٹاؤن میں کورونا کے 188 کیسز رپورٹ ہوئے جہاں 6 ہزار 699 گھر اور 15 ہزار 407 فیملیز رہائش پذیر ہیں۔ فیصل ٹاؤن کی آبادی 67 ہزار 791 افراد پر مشتمل ہے۔

گارڈن ٹاؤن میں 238 مریض سامنے آئے جہاں 8 ہزار 95 گھر اور 17 ہزار فیملیز رہائش پذیر ہیں۔ گارڈن ٹاؤن کی آبادی 83 ہزار 307 افراد پر مشتمل ہے۔

گلشن راوی میں 212 مریض سامنے آئے جہاں 7 ہزار 842 گھر اور 19 ہزار 605 فیملیز رہائش پذیر ہیں۔ گلشن راوی کی آبادی 72 ہزار 315 افراد پر مشتمل ہے۔

والڈ سٹی میں 170 مریض رپورٹ ہوئے جہاں 24 ہزار 948 گھر اور 74 ہزار 844 فیملیز رہائش پذیر ہیں۔ والڈ سٹی کی آبادی 2 لاکھ 99 ہزار 276 افراد پر مشتمل ہے۔

اندرون شہر کی اکبر منڈی اور شاہ عالم مارکیٹ کھلی رہے گی۔ اعظم مارکیٹ، رنگ محل و دیگربازاروں کو بند کرنے بارے چیف سیکرٹری اور کمشنر اجازت دیں گے۔

مکمل لاک ڈاؤن ہونے والےعلاقوں میں شاپنگ مالز اور کاروباری سرگرمیاں بند رہیں گی۔