کچھ تو گڑبڑ ہے دشا، ممبئی پولیس کی بڑی لاپروائی، سشانت سنگھ راجپوت خودکشی سے متعلق اہم انکشافات

لاہور(ویب ڈیسک) اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت کے معاملے میں ممبئی پولیس کی بڑی لاپروائی سامنے آئی ہے۔ خبر ہے کہ ممبئی پولیس نے انجانے میں دشا سالیان سے جڑی فائل کا فولڈر ڈلیٹ کردیا ہے۔ یہاں تک کہ بہار پولیس کو دشا کا کمپیوٹر، لیپ ٹاپ بھی نہیں دیا جارہا ہے جبکہ بہار پولیس کا کہنا ہے کہ اگر انہیں لیپ ٹاپ دے دیا جائے تو وہ فولڈ کو دوبارہ نکال سکتے ہیں۔ ممبئی پولیس نے اس کیس میں جس طرح کا بیان بہار پولیس کے سامنے رکھا ہے وہ اب ممبئی پولیس کے کام کو شک کے دائرے میں لارہا ہے۔
تفصیلات کے مطابق بہار پولیس کی ٹیم ہفتے کی شام مالنی پولیس تھانہ میں دشا سالیان کی خودکشی کے بارے میں کچھ اہم معلومات لینے پہنچی تھی۔ ذرائع کے مطابق ممبئی پولیس کے جانچ افسر سبھی معلومات زبانی طور (verbally)پر شیئر کر رہے تھے۔تبھی ممبئی پولیس کے تفتیشی افسر کو کہیں سے ایک کال آئی اور اس کے بعد چیزیں بدل گئیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق اس کے بعد ممبئی پولیس کی جانب سے کہا گیا کہ انجانے میں دشا ست جڑی فائل کا فولڈر ڈلیٹ ہوگیا ہے۔ اس کے بعد بہار پولیس کو وہ کمپیوٹر، لیپ ٹاپ بھی نہیں دیا گیا۔
سشانت سنگھ راجپوت کی پوسٹ مارٹم سے متعلق بھی اہم انکشافات سامنے آئے ہیں۔ جن کے مطابق اس پورے معاملے میں انویسٹی گیشن آفیسر نے جوآغاز میں جو ثبوت پایا تھا اس کا ذکر تک رپورٹ میں نہیں کیا گیا ۔ اس کے ساتھ ہی سشانت سنگھ راجپوت کے گھر سے اس ویڈیوگرافر نے کیا ویڈیو ریکارڈ کی تھی، اس کے بارے میں رپورٹ میں نہیں بتایا گیا۔ یہاں تک کہ ڈیڈ باڈی کی ہائٹ یاکوئی آئیڈینٹٹی مارک بھی رپورٹ میں نہیں بتایا گیا ہے۔
دوسری جانب اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی بہن شویتا سنگھ کیرتی نے ہفتے کے روز بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی سے اپنے بھائی کی موت کے معاملے میں دخل دینے اور یہ یقینی بنانےکی اپیل کی کہ کسی بھی ثبوت کے ساتھ چھیڑ چھاڑ نہ کی جائے۔غور طلب ہے کہ سُشانت سنگھ راجپوت 14 جون کو باندرہ واقع اپنے اپارٹمینٹ میں مردہ پائے گئے تھے۔ پولیس کا کہنا ہےکہ انہوں نے خود کشی کی ہے، لیکن ان کے مداحوں اور خاندان کا ماننا ہے کہ اس کے پیچھے گہری سازش ہے۔ اس معاملے کو مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) کو سونپنے کا مطالبہ بڑھ رہا ہے۔
سُشانت سنگھ راجپوت کے خاندان نے ان کی خاتون دوست ریا چکرورتی پر ان کےاکائونٹ سے اپنے اکائونٹ میں پیسے ٹرانسفرکرنے اور انھیں ذہنی طور پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے بہار کے دار الحکومت پٹنہ میں شکایت درج کروائی ہے، جس کے بعد بہار پولیس نے بھی اس معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہے۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے 15 کروڑ روپئے کے مشتبہ لین دین کے سلسلے میں ریا اور دیگر افراد کے خلاف منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیا ہے۔
( بشکریہ نیوز 18)