نوازشریف مفرور مجرم ہےنیا پاسپورٹ نہ دیا جائے، وزارت داخلہ

ویب ڈیسک: وزارت داخلہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ کیونکہ سابق وزیراعظم نوازشریف کو پاکستانی عدالتوں کی جانب سے مفرور قرار دیا گیا ہے لہٰذا ان کو نیا پاسپورٹ جاری نہ کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ کیونکہ سابق وزیراعظم ایک مفرور مجرم ہیں اس لئے ان کے پاسپورٹ کی تجدید نہ کیا جائے۔  نوازشریف کے پاس ڈپلومیٹک پاسپورٹ موجود ہے۔وزارت داخلہ کی جانب سے سیکریٹری وزارت خارجہ کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف کی پاسپورٹ کی تجدید کی درخواست پر کارروائی نہ کی جائے۔

وزارت داخلہ نے خط میں کہا ہے کہ ہائی کورٹ کے فیصلے کے مطابق نواز شریف اعلان شدہ مجرم ہیں اور یہ کہ ہائیکورٹ کے مطابق نوازشریف کو 8ہفتے کی ضمانت ملی تھی۔ پنجاب حکومت نے 8 ہفتے مکمل ہونے کے بعد ضمانت میں توسیع نہیں کی تھی۔ نوازشریف کو سزا کی بقیہ مدت کوٹ لکھپت جیل میں گزارنی ہے۔نوازشریف سزا سے بچنے کیلئے ملک سے فرار ہوئے۔

یاد رہے کہ لندن میں علاج کی غرض سے موجود نوازشریف کے پاسپورٹ کی مدت ختم ہو رہی ہے۔ نوازشریف 8ہفتوں کی ضمانت پر لندن علاج کے لئے گئے تھے تاہم کئی ماہ گزرنے کے باوجود وہ وطن واپس نہیں آئے۔

تبصرہ کریں

Your email address will not be published.